دوسرے ویب سائٹ سے کاپی کرنے کے نقصان اور فائدے copyright kya hai | copy karne ke nuksan

دوسرے ویب سائٹ سے کاپی کرنے کے نقصان اور فائدے copyright kya hai | copy karne ke nuksan

دوسرے ویب سائٹ سے کاپی کرنے کے نقصان اور فائدے copyright kya hai | copy karne ke nuksan
copyright ke nuksanat

 

یعنی آپ ایک بلاگر ہے تو آپ آپ نے ضرور کاپی رائٹ (copyright) کنٹینٹ کا نام سنا ہوگا اور روزانہ دیکھتے ہوں گے بہت سے بلاگر دوسرے ویب سائٹ کے مواد کو کاپی کرکے اپنے ویب سائٹ میں ڈال دیتے ہیں.

  

آپ پوسٹ کے ٹائٹل کو دیکھ کر سمجھ سکتے ہے کہ نقصان تو ٹھیک ہے سمجھ میں آتا ہے پر کیا کاپی کرنے کے فائدے بھی ہے ؟ تو میں آپ کو آسان ایک ہی لفظ میں کہنا چاہؤں گا کہ کاپی کرنے میں ایک فیصد بھی فائدہ نہیں ہیں. 

(نوٹ: فائدہ لفظ صرف جو کاپی کرتے ہے اس کے لئے شامل کیا گیا ہے جسکا اس پوسٹ سے کوئی تعلق نہیں ہیں.)

 

کاپی رائٹ مواد آج کل بلاگنگ کی دنیا میں ایک بہت ہی گرم موضوع بن گیا ہے. میں بھی کاپی رائٹ کنٹینٹ کے بارے میں روزانہ کچھ نہ کچھ سُنتا رہتا ہوں. یعنی آپ بھی دوسرے کے ویب سائٹ سے مواد کاپی کرکے اپنے ویب سائٹ میں ڈالتے ہے تو آپ کو یہ سننے میں بہت بُرا لگے گا کہ آپ اپنا ٹائم بلاگنگ میں ضائع کررہے ہے. کیوں کہ کاپی رائٹ مواد کا کوئی مستقبل نہیں ہیں.

 

کاپی رائٹ مواد صرف آپ کا ٹائم برباد کرتا ہے اور اس کا کوئی فائدہ نہیں ملتا ہے. کاپی رائٹ مواد سے نہ کمائی ہوتی ہے اور نہ ہی ویب سائٹ پر ٹریفک آتی ہے. پہلے کی نسبت انٹرنیٹ اور بھی تازہ ترین اور سمارٹ ہو گیا ہے خاص کر گوگل.

 

جو بلاگرز مواد کاپی کرکے اپنے ویبسائٹ میں شائع کرتے ہے ان کے لئے گوگل نے گوگل پانڈا سمیت دیگر اہم ٹیکنالوجیز کو لانچ کیا ہے. گوگل پانڈا کاپی رائٹ مواد کو آسانی سے پہچان کر اسکی رپورٹ گوگل کو دیتا ہیں. 

 

اس لئے میں آپ سے یہی کہوں گا کہ اگر آپ انٹرنیٹ پر کچھ کرنا چاہتے ہے تو کاپی رائٹ کرنا بند کر دے. جو آپ کو آتا ہے اس کو کرکے. یہ ضروری نہیں سب بلاگنگ سے متعلق ہی ویب سائٹ بنائے اور بھی بہت سے ٹاپک موضوعات ہے جن پر ویب سائٹ کرکے اچھے پیسے کما سکتے ہیں. 

آپ سپورٹس کھیل، صحت، کھانا بنانا، تعلیم، سفر، خبریں، وغیرہ وغیرہ پر بھی اپنا بلاگ بنا سکتے ہیں. 

 

چلیں اب دوسرے کے ویب سائٹ سے مواد کاپی کرنے سے ہونے والے نقصان کے بارے میں جان لیتے ہیں. 

 

{tocify} $title={Table of Contents}


نمبر ایک: کاپی رائٹ مواد کا کوئی مستقبل نہیں ہوتا ہیں

 

یعنی آپ مواد کو کاپی کرکے اس میں تھوڑا بہت تبدیلی بھی کرکے شائع کریں گے تب بھی آپ کا وہ کنٹینٹ کاپی رائٹ ہوگا اور اس کنٹینٹ کا کوئی مستقبل نہیں ہوگا کیوں کہ آپ کے اس کنٹینٹ کو گوگل تلاش کر لے گا. اور آپ کے اس مواد کو وہ گوگل پر رینک نہیں دے گا. 

 

یعنی آپ ایک-دو مہینے تک مواد کو کاپی کرکے شائع کرتے ہے تو بہت ہی جلدی گوگل پانڈا آپ کے ویب سائٹ کو penelize کر دے گا. اس کے علاوہ یعنی آپ اپنے ویب سائٹ میں ایڈسینس استعمال کررہے ہے تب آپ کے کاپی رائٹ مواد کی وجہ سے آپ کے گوگل ایڈسینس کا اکاؤنٹ بھی بلاک ہو جائے گا.

 

اور بھی بہت سے نقصان ہے کاپی رائٹ مواد کے. میں پورے یقین کے ساتھ کہہ سکتا ہوں کہ اگر آپ مواد کو کاپی کرکے شائع کرتے ہے تو کبھی بھی آپ کا ویب سائٹ لمبے عرصے تک نہیں جائے گا. اور آپ کے ویب سائٹ کا کوئی اچھا مستقبل نہیں ہوگا.

اس لئیے کنٹینٹ کو کاپی کرنا بند کرے اور انٹرنیٹ پر کچھ اچھا کریں. 

 
نمبر دو: کاپی رائٹ مواد کی وجہ سے dmca ویب سائٹ کو ڈیلیٹ کرکے ختم کر سکتا ہے 

 

یعنی آپ کسی بڑے ویب سائٹ سے کوئی چیز کاپی کرتے ہو تو اس ویب سائٹ کا مالک آپ کے خلاف DMCA (Digital Millennium Copyright Act) کو رپورٹ کر سکتا ہے اگر آپ کی کوئی رپورٹ DMCA پر کرتا ہے تو وہ آپ کے ویب سائٹ کے خلاف ایکشن بہت ہی جلدی لے گا. 

 

یعنی آپ کا ویب سائٹ بلاگر ڈاٹ کام پر ہے تو DMCA آپ کے ویب سائٹ کو بلاگر سے ڈیلیٹ کر دے گا. اور آپ کے آئی پی ایڈریس کو بھی بلیک لسٹ کر دیا جائے گا. اگر آپ کا آئی پی ایڈریس لاک ہو گیا تب آپ اس کمپیوٹر موبائل یا ٹیبلٹ سے کبھی بھی دوسرا ویب سائٹ نہیں بنا پاؤں گے اس لئے کاپی رائٹ مواد والا کام کرنا بند کر دے. 

 

اگر آپ کی سائٹ کوئی کاپی کررہا ہے تو آپ اس کی گوگل سے DMCA رپورٹ کرے اس کے لئے آپ اس لنک پر جاکر  فائل بھر کر رپورٹ کریں. 

 

نمبر تین: ویب سائٹ کی رینکنگ سرچ پر بہتر نہیں ہوگی

 

یعنی آپ کوئی مشہور پوسٹ کو کاپی کرکے اپنے ویب سائٹ پر شائع کرتے ہے تو آپ کو اس پوسٹ سے کوئی ٹریفک نہیں ملے گی کیوں کہ وہ پوسٹ پہلے سے ہی شائع کیا ہوا ہے. یعنی آپ کے ویب سائٹ پر ٹریفک نہیں آئے گا تو آپ کے ویب سائٹ کی رینکنگ بھی بہتر نہیں ہوگی. 

 

نمبر چار: کاپی رائٹ کنٹینٹ ایک غیر قانونی کام ہیں

 

میرے خیال میں آپ کو غیر قانونی کام کے بارے میں پتہ ہوگا غیر قانونی کا مطلب رول کے خلاف ہوتا ہے. مطلب آپ رول کے خلاف کام کر رہے ہے. یعنی آپ اپنے ویب سائٹ کو رول کے خلاف چلا رہے ہے تو سرچ انجن آپ کو منفی مارک دے گا اور آپ کو منفی مارک ملتے تب آپ کی ویب سائٹ سرچ انجن کے ٹاپ پر کبھی بھی نہیں آئے گی.

 

نمبر پانچ: صارف کا آپ پر سے بھروسہ اٹھ جائے گا

 

آپ کے پڑھنے والوں کو یہ پتہ چل جائے گا کہ آپ مواد کو کاپی کرکے شائع کرتے ہے تب ان کا آپ پر سے بھروسہ ختم ہو جائے گا اور آپ اپنا احترام بھی کھو دیں گے م.

اس لئے کبھی بھی ایک کاپی کیٹ نہ بنے کیوں کہ یہ ایک طرح کی گالی ہے ہمیشہ اپنے صارفین کو مددگار معلومات دینے کی کوشش کرے اور انٹرنیٹ پر قانونی کام کرے.

 

نمبر چھ: کاپی رائٹ تصویر بھی استعمال نہ کریں

 

بہت سے بلاگر یہ غلطی بھی کر دیتے ہے وہ پوسٹ تو اصل لکھتے ہے،پر تصویر گوگل سے ڈاؤنلوڈ کرکے استعمال کر لیتے ہے، جس سے بھی اُن کا نقصان ہو جاتا ہے پر اس سے بچنے کا بھی ایک طریقہ ہے آپ Royalty free تصاویر استعمال کرے جس میں کاپی رائٹ کا کوئی ٹینشن نہیں. 

 

کاپی رائٹ مواد کے کیا کیا نقصانات ہیں

  • آپ اپنے صارفین سے اعتماد اور احترام کھو دیں گے.
  • آپ کی انٹرنیٹ پر امیج خراب ہو جائے گی.
  • آپ کے ویب سائٹ کو گوگل جرمانے کا سامنا کرنا پڑے گا.
  • آپ اپنے ویبسائٹ کی سرچ انجن میں رینکنگ بھی کھو دیں گے.
  • آپ کاپی کنٹینٹ سے کچھ بھی پیسہ نہیں کما پائیں گے ایڈسینس کو تو بھول ہی جائے.
  • آپ کی ویب سائٹ کبھی بھی طویل عرصے تک نہیں چل سکتی.
  • آپ کا دوسرے بلاگرز سے اچھا رشتہ نہیں بنے گا.
  • آپ کے سپورٹ میں کوئی نہیں ہوگا اور آپ کو اکیلے ہی کام کرنا ہوگا.

 

آخری الفاظ:

 

ایک کامیاب بلاگر بننے کے لئے آپ کو اپنے جذبے کے ساتھ کام کرنا چاہیے. یعنی آپ ایک کوالٹی اور اوریجنل پوسٹ لکھتے ہے تب اس کنٹینٹ کو آپ کے صارفین بھی پسند کریں گے اور سرچ انجن میں بھی وہ کنٹینٹ تازہ ہوگا اور اس کو زبردست رینک ملے گی.

 

کبھی بھی کنٹینٹ کاپی کرنے کے لئے سخت کام نہ کرے کیوں کہ ایسا کرنے پر آپ کو کچھ بھی نہیں ملے گا صرف ٹائم ضائع ہوگا.

 

تو دوستوں میں نے آپ کو کاپی رائٹ مواد کے بارے میں بتایا کہ یہ آپ کو کیسے نقصان پہنچاتا ہے یعنی آپ اصل، حقیقی ایمانداری کے ساتھ مواد لکھ کر شائع کرتے ہے تو میں یقین کے ساتھ کہہ سکتا ہوں کہ آپ کو آمدنی ٹریفک اور ہائی رینک سب ہی ملیں گے. مجھے امید ہے کہ آپ اب دوسرے کے ویب سائٹ سے مواد کو کاپی نہیں کریں گے.

 

آپ کے پاس کاپی رائٹ مواد کے بارے میں اور کوئی آئیڈیا اور تجربہ ہے تو کمنٹس بکس میں ضرور شئر کرے اور پلیز اس پوسٹ کو اپنے دوستوں کے ساتھ شئر کرے تاکہ وہ بھی بلاگنگ کا ایک اور چہرہ دیکھ سکے اور بلاگنگ میں کچھ اچھا کر سکے.

 

 

یہ پوسٹ وقف ہے ان بلاگرز کے لئے جو انجانے میں غلطیاں کر دیتے ہے زیادہ معلومات نہ ہونے کی وجہ سے.

 

دعاؤں میں یاد رکھیں والسلام... 🙂

Techpk

Hello Visitors, I Owner Of This Site My Name Is Abdul Kareem And I Belong To Pishin District Of Balochistan Province of Pakistan facebook twitter blogger pinterest

Post a Comment

Previous Post Next Post